36

قطر اور سعودیہ عرب کے سفارتی تعلقات 4 سال بعد بحال

دوہا: قطر اور سعودیہ عرب کے تعلقات بہتری کی جانب گام زن ہوگئے ہیں، اور 4 سال بعد قطر نے سعودیہ میں اپنا سفیر مقرر کردیا ہے۔ 

الجزیرہ کے مطابق قطری امیر شیخ تمیم بن حماد التھانی نے سعودیہ عرب کے ساتھ سفارتی تعلقات کو بحال کرنے کے لیے بندر محمد عبداللہ ال عطیہ کو چار سال تک جاری رہنے والے علاقائی تنازع کے بعد سعودیہ عرب میں سفیر مقرر کردیا ہے۔ بندر محمد عبداللہ اس سے قبل کویت میں سفیر تھے اور خلیج جنگ میں ثالث کی حیثیت سے بھی فرائض سر انجام دے چکے ہیں۔

یاد رہے کہ جون 2017 میں سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر نے قطر کے ساتھ زمینی، ہوائی اور فضائی راستے بند کردیے تھے۔ ان ممالک نے قطری ٹی وی چینل الجزیرہ  کی بندش اورترک باغیوں کو ملک سے باہر نکالنے کا مطلبہ کرتے ہوئے قطر پر مسلح گروپوں کی پشت پناہی کرنے اور ایران کا ساتھ دینے کا الزام عائد کیا تھا۔ تاہم قطر نے ان الزامات کی تردید کرتے ہوئے ان ممالک کے تمام مطالبات کو مسترد کردیا تھا۔

درج بالا 4 ممالک میں سے سعودیہ عرب اور مصر نے قطر کے ساتھ اپنے سفارتی تعلقات دوبارہ بحال کردیے ہیں، جب کہ بحرین نے ابھی تک قطر کے ساتھ صرف تجارتی روابط کو بحال کیاہے۔ رواں سال جنوری میں سعود ولی عہد محمد بن سلمان کی سربراہی میں ہونے والے اجلاس میں دونوں ممالک نے تعلقات کی بحالی پر اتفاق کیا تھا۔

The post قطر اور سعودیہ عرب کے سفارتی تعلقات 4 سال بعد بحال appeared first on ایکسپریس اردو.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں